• رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے عشق و محبت کا بیج دل میں بوؤیونہی آپکے ادب اور تعظیم کو جانِ ایمان س
  • انبیاء و اولیاء سے عقیدت رکھو ان کے آداب اور اعزاز میں کمی نہ کرو۔ یو نہی علمائے اہلسنت کے ساتھ پیش
  • اپنے رتبے سے بڑھ کر دعویٰ نہ کرو۔ہر وقت عجز وتواضع میں رہو۔
  • جس لیاقت کا جو آدمی ہو اس کی ویسی ہی عزت کرو۔
  • ہر اک کا حق پہچانو۔
  • جو راز کہنے کے قابل نہ ہو اُس کو منہ سے ہر گز نہ نکالو۔
  • دوست کی پہچان یہ ہے کہ وقتِ مصیبت کام آئے۔
  • احمق اور نادان آدمی کی صحبت سے کنارہ کرو۔
  • عقلمند اور دانا آدمی سے دوستی کرو۔

Most Viewed

  • Sharah Hadees e Qustuntunia

    Sharah Hadees e Qustuntunia

  • Yazeed Kay Ghazi

    Yazeed Kay Ghazi

  • Assalato Wassalamo Alaika Yaa Rasool Allah Parhne kaa Jawaaz

    Assalato Wassalamo Alaika Yaa Rasool Allah Parhne kaa Jawaaz

  • Azaan Wa Salat o Salam

    Azaan Wa Salat o Salam

 

Monthly Faiz e Aalam February 2013 (ماہنامہ فیض عالم فروری ۲۰۱۳)

Rating
Author
Mufti Fayyaz Ahmed uwaysi
Language
Urdu
Category
Faiz e Aalam (فیض عالم )
Total Downloads
140
Total Views
1031
Date
2013-07-18
Total Pages
30
ISBN No
N/A
Read Online
Open Book
Download
Download (PDF)
Description:

FAIZ E AALAM IS OFFICIAL MONTHLY MAGAZINE OF JAMIA'A UWAYSIA WHICH WAS PUBLISHED BY HUZUR FAIZ E MILLAT ALAEH REHMA WHO LATER ON GAVE THIS RESPONSIBILITY TO HIS ELDEST SON ABUL MEERATH MUFTI MUHAMMAD SALAEH UWAYSI (MARTYRED) AND NOW IT IS BEING COMPILED AND PUBLISHED UNDER THE SUPER VISION OF MUFTI FAYYAZ AHMAD UWAYSI SAHIB. After the completion of 23 years of successful publication of our Monthly magazine, "Faiz e Aalam", this is the edition of February 2013 by the grace of Almighty.

یہ ماہانامہ رسالہ فیض عالم جس کی بنیاد حضور فیض ملت نے خود رکھی بہاولپور کی مرکزی جامع مسجد سے شائع ہوتا ہے۔ قبلہ فیضِ ملت نےاپنی حیاتِ مبارکہ میں اس رسالے کو شائع کرنے کی ذمہ داری اپنے بڑے شہزادے مفتی محمد صالح اویسی (رحمۃ اللہ علیہ) کو سونپی تھی۔ اب مفتی صالح اویسی صاحب کے وصال کے بعد حضرت مفتی محمد فیاض اویسی صاحب (دامت برکاتھم العالیہ) اس کی ترتیب و اشاعت کی ذمہ داری نبھا رھے ہیں۔ پاکستان کے کئی شہروں میں قارئین اس کا مطالعہ کرتے ہیں

 
comments